DOCTOR MUHAMMAD HANIF KHAN NIAZI

Doctor Muhammad Hanif Khan Niazi

Doctor Muhammad Hanif Khan is from Rokhri ,Mianwali . He was born 10 April 1977 .He is self-made man who after lot of efforts become Dental Doctor and excellent writer .

In 1996 he Started School education from  Nauranga  Universal School Paki Shah Mardan  ,in 1997 Joined  School at Al-Suffah College PAF road Mianwali and left it in 1999 .He took admission in  de’Montmorency  College of Dentistry/Punjab Dental Hospital in 2001 and finally passed the examination in  2006 and became Dental Doctor  .

He started New Job at Punjab Dental Hospital Lahore/ De’Montmorency College of dentistry as Pre-registration house officer  from 22  February  2007 to 22 February  2008 .He joined  Agritech (Formerly Pak American Fertilizers) Limited as Dentist  on 5  January  2012 . Doctor Hanif works in  Dental Zone Mianwali as Dental Surgeon  since  June 22, 2018 .Now a days He joined  RGC- PAF Road, Mianwali  as Managing director   on 1 January 2020

Doctor Muhammad Hanif Khan Niazi the man who loves humanity, the man who loves simplicity, the man who loves purity. the man who loves sincerity,the man who loves honesty !!! May God Bless You on your journey !! May God Bless You with a long life, Aameen

OPENING CEREMONY DENTAL ZONE MIANWALI


Dental Zone Clinic was opened on 21 June 2018 by well-known Professor writer,Poet Sir Munawar Ali Malik  as  the chief gust .Sir Munawar words about the opening ceremony —

—-افتتاح ——————–

بسم اللہ الرحمن الرحیم ————
اللہ اللہ ، کیا سماں تھا 21 جون کی رات ——– !!!!

تعارفی تقریب کے بعد عالیشان کلینک کا افتتاح ھؤا – ھم نے تو سمجھا تھا دو کمروں کا کلینک ھوگا ، مگر یہاں تو متعدد کمروں پر مشتمل شاندار عمارت دیکھ کر بے ساختہ الحمدللہ زبان پر آگیا –
استقبالیہ، مردحضرات کا ویٹنگ لاؤنج، پیچھے ایک گیلری اس کے دائیں جانب خواتین کا ویٹنگ روم ، بائیں جانب جدید ترین آلات سے مزین سرجری ( آپریشن تھیئٹر) مزا آگیا ، یہ سب کچھ دیکھ کر- یوں لگا جیسے لاھور یا اسلام آباد کے کسی جدید ترین ڈینٹل کلینک میں آگئے – سرجری میں ڈاکٹر حنیف نے مختلف تنصیبات کے استعمال پر ایک مختصر سا لیکچر دے کر ھمیں اور بھی حیران کر دیا –

پنڈال میں واپس آئے تو بہت عمدہ کھانا آگیا – وھاں جو حلوہ تھا اس کے بارے میں کسی وقت ڈاکٹر حنیف سے پوچھوں گا کہ کہاں سے بنوایا تھا-


کھانا شروع ھونے سے پہلے سیلفیاں بنانے کا طویل سلسلہ کافی دیر برپا رھا – بہت سے دیرینہ عزیزوں اور مہربانوں کے ساتھ پکچرز بنائی گئیں – سب کے نام یاد نہیں آرھے، ان میں میرے جگرحاجی اکرام للہ خان نیازی، عصمت گل خٹک ، عمران حفیظ ، مجیب اللہ خان نیازی ، قمر بھروں زادہ ، مہربان اباخیل، وقار احمد ملک اورآفتاب خان احمد کے نام اس وقت یاد آرھے ھیں – جو یاد نہیں آرھے امید ھے میری کوتاھی معاف کردیں گے-
اس تقریب میں میرے لیے سب سے بڑا اعزاز ڈاکٹرحنیف نیازی کے والد کا دیدار تھا – لائق بیٹے کی اس بہت بڑی کامیابی پر ان کی آنکھوں میں تشکر کے آنسودیکھنے والوں کی آنکھیں بھی بھیگنے لگیں –
سب لوگ وھاں سے بہت سی خوبصورت یادوں کی جھولیاں بھر لائے –
آئیے مل کر دعا کریں کہ رب کریم ڈاکٹرحنیف نیازی کے اس کارخیر کو شاندار کامیابیاں عطا فرمائے-
چکاچوند روشنیوں سے آراستہ پنڈال – سلیقے سے لگی ھوئی کھانے کی میزیں ، پنڈال کے شمالی سرے پر سجاسجایا سٹیج ، منظر سارا ولیمے کا ، بات کچھ اور تھی –

یہ تقریب میانوالی کے جواں سال ڈینٹل سرجن ، ڈاکٹر حنیف نیازی کے ڈینٹل کلینک
DENTAL ZONE کی افتتاحی تقریب تھی- افتتاح کا اعزاز مجھے نصیب ھؤا – سٹیج پر میرے دائیں بائیں گورنمنٹ کالج میانوالی کے فزکس ڈیپارٹمنٹ کے سابق سربراہ , پروفیسر سید اعجاز محمود شاہ ، الصفہ کالج کے پرنسپل پروفیسر عبدالوحید قریشی ، گورنمنٹ کالج میانوالی کے فزکس کے پروفیسرحیات اللہ ملک ، برٹش کونسل کے ماسٹر ٹرینرمحمدفیاض اور پی اے ایف کالج میانوالی کے انگلش کے پروفیسرامجدعلی ملک جلوہ گر تھے – تقریب کے سٹیج سیکریٹری میانوالی کے ادبی حلقوں کی محبوب شخصیت، جواں سال شاعر پروفیسر شاکر خان تھے –

سٹیج پر بیٹھے ھوئے سب معزز مہمانوں نے اپنے اپنے انداز میں ڈاکٹر حنیف نیازی کو خراج

 تہنیت (مبارک باد) پیش کیا – میں نے ڈاکٹر حنیف نیازی کی کامیابیوں اور بے حساب مقبولیت کا ذکر کرتے ھوئے کہا ان تمام تر خوش نصیبیوں کی اصل وجہ یہ ھے کہ ڈاکٹر حنیف کا قبلہ درست ھے- جب کوئی ان کی کسی خوبی کی تعریف کرے تو یہ کہتے ھیں “جی ، یہ اللہ کا فضل ، میرے والدین کی دعاؤں ، میرے ٹیچرز کی شفقتوں اور میرے دوستوں کی محبتوں کا ثمر ھے، اس میرا کمال تو کچھ بھی نہیں “ –

تقریب کے میزبان ( ڈاکٹرحنیف) کو تقریب کے دوران میں نے ایک منٹ کے لیے بھی بیٹھا نہیں دیکھا – وہ مسلسل مہمانوں کے استقبال اور تقریب کے انتظامات میں مصروف رھے – ایک بار سٹیج کے سامنے سے بھاگتے ھوئے گذرے تو میں نے اشارے سے بلا کر کہا “اللہ کے بندے ، ھمارے ساتھ ایک پکچر تو بنوالو “ – سادگی اور انکسار کی اس سے خوبصورت مثال اور کیا ھو سکتی ھے –

اس تقریب کی ایک اھم خوبی یہ تھی کہ صاف ستھرے ، ھنستے مسکراتے لوگوں کا اتنا بڑا اجتماع بہت کم دیکھنے میں آتا ھے – ھر بندہ اپنی جگہ باکمال اور محبت کے لائق تھا –

یہ تب کی تصویر ہے جب ڈاکٹرحنیف    لکڑہارے کا کام کرتے کرتے،سید عطا محمد شاہ صاحب مرحوم کے پاس پکی شاہمردان پہنچے

DOCTOR HANIF PARENTS

HAVING CUP OF TEA FROM MOTHER HANDS

ABU AMMI ( MOHAMMAD KHAN _FATHER AND MUNAWAR KHATUN)

WITH PARENTS AT THE TIME OF OPENING CEREMONY OF DENTAL ZONE

Doctor is also a very good writer and regularly writes posts and columns . A book “MUSAS” is also at his credit .

MUSAS Mianwali united sons and sisters is a Plate form to motivate Mianwalians to support Needy Students of Mianwali and in this rgard Doctor  Hanif along with his team keep visiting  schools for lectures and motivation to the students .

1 thought on “DOCTOR MUHAMMAD HANIF KHAN NIAZI”

  1. Dr hanif sir is one of the most loving caring and kind-hearted human being from mianwali. May Allah bless him more success in his life. His smiling face is sign of hope for many peoples.

Your words for Mianwali and Mianwalians